Jashan e eid milad ul nabi 21

جشن عید میلاد النبی ﷺ پورے ملک میں مذہبی جوش و جذبہ سے منائی گئی

ملک بھر میں جشن عید میلاد النبیﷺ بھرپور مذہبی جوش و جذبہ سےمنائی گئی۔ مساجد، گلی محلوں اور سرکاری عمارات کی برقی قمقموں سے سجاوٹ کی گئی۔

دنیا کی تاریکی کو اپنے نور مجسم سے روشنیوں میں تبدیل کرنے والے محسن انسانیت، محبوب خدا، آقائے دوجہاں، خاتم النبین والمرسلین حضرت محمد مصطفیٰﷺکی ولادت باسعادت کی مناسبت سے عید میلاد النبیﷺ کے سلسلے میں ملک بھر میں چراغاں اور میلاد، درود و سلام کی محافل کا انعقاد کیا گیا۔

عید میلاد النبیﷺ کے سلسلے میں عاشقان مصطفیٰ ﷺ نے گلیوں ، بازاروں اور گھروں کو برقی قمقموں سے دلہن کی طرح سجایا۔ تمام سرکاری وغیرسرکاری عمارات پر بھی چراغاں کیا گیا۔ اسی طرح مساجد، دفاتر، مارکیٹوں، بازاروں اور شاہراہوں پر بھی خوبصورت و رنگ برنگی روشنی کا اہتمام کیا گیا۔

مزید اردو خبروں کیلئے

عید میلاد النبیﷺ کے سلسلے میں عاشقان مصطفیٰ ﷺ نے گلیوں اور بازاروں اور گھروں کو برقی قمقموں سے دلہن کی طرح سجایا ہے جبکہ تمام سرکاری وغیرسرکاری عمارتوں پرچراغاں کیا گیا۔ اسی طرح مساجد، دفاتر، مارکیٹوں، بازاروں اور شاہراہوں پر بھی خوبصورت روشنیوں کا اہتمام کیا گیا۔

حضور نبی کریم ﷺ سے محبت کا اظہار کرتے ہوئے دن بھر ملک بھر میں تمام گلی محلوں سے چھوٹے بڑے جلوس بھی نکالے جاتے رہے۔ جلوسوں کے شرکا کی جانب سے “سرکار کی آمد مرحبا” اور “لبیک یارسول ﷺ اللہ ” کا ورد بھی کیا جاتا رہا۔  عاشقان رسولﷺ کی جانب سے مختلف تقاریب کا انعقاد بھی کیا گیا۔

عاشقان نے رسول اکرم ﷺ کی ولادت باسعادت کے موقع پر حضور ﷺ کی بارگاہ میں درود و سلام اور نعت رسول مقبول ﷺ کے گلہائے عقیدت پیش کئے۔

عید میلاد النبی ﷺ کے موقع پر امن و امان کو برقرار رکھنے کیلیے لاہور، کراچی اور کوئٹہ سمیت دیگر چھوٹے بڑے شہروں میں موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی اور موبائل فون سروس کوجزوی طور پر بند رکھا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں


Notice: Undefined index: HTTP_CLIENT_IP in /home/aliucqdo/public_html/wp-content/themes/upaper/functions.php on line 296

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/aliucqdo/public_html/wp-content/themes/upaper/comments.php on line 73

Notice: Undefined variable: aria_req in /home/aliucqdo/public_html/wp-content/themes/upaper/comments.php on line 79

اپنا تبصرہ بھیجیں